کالم

محرم کلچر میں کیسے تبدیل ہوا

محرم کلچر میں کیسے تبدیل ہوا

لیاقت علی ایک دوست انجئنیر غلام عباس لکھتے ہیں کہ محرم کلچر میں کیسے تبدیل ہوا ۔ محرم کلچر میں تبدیل تب ہوا جب برصغیر والوں نے اسے مکمل طور پر اپنا لیا۔ اودھی تہذیب نے اسے اپنے اندر گوندھ لیا، اسے اتنی جگہ دے دی کہ محرم کا سوگ دس دن سے بڑھ کر پچاس دن اور پھر آٹھ […]

· 1 comment · کالم
کراچی کے حالات کا ذمّہ دار کون ہے

کراچی کے حالات کا ذمّہ دار کون ہے

آصف جاوید ایم کو ایم، پیپلز پارٹی، قوم پرست جماعتیں، اسٹیبلشمنٹ، وفاق ،  اور ایجنسیاں کراچی  کی موجودہ حالت کی ذمّہ دار ہیں۔ سب نے اپنے اپنے مفادات کے کھیل کھیلے، سب کا مقصد ایک ہی تھا، کراچی پر کنٹرول، کراچی کے وسائل پر کنٹرول، کراچی سے ہونے والی آمدنی پر کنٹرول، بندرگاہ پر کنٹرول، کراچی کی سِوِل انتظامیہ پر […]

· 0 comments · کالم
جمہوریت کےکھیل میں تماش بین کون ہے؟

جمہوریت کےکھیل میں تماش بین کون ہے؟

بیرسٹرحمیدباشانی پاکستان میں جمہوریت کا سفربڑے ناہموارراستوں سےہوکرگزرا ہے۔سترسال میں کئی بارجمہوریت کی بساط بچھائی اورلپیٹی گئی۔ مگر گزشتہ بارہ تیرہ سال سے یہ سفرہموارہے۔لگتا ہےجمہوریت کوبطورنظام سماج اورطاقت ورحلقوں میں شرف قبولیت مل رہی ہے۔ یہ حوصلہ افزااورخوش آئیند بات ہے۔مگرتصویرکا دوسرا رخ بھی ہے، اور یہ رخ دیکھنے کے لیے کچھ عالمی رپورٹوں پرایک نظرڈالنا ضروری ہے۔ عالمی […]

· 0 comments · کالم
مولوی ملّا نہیں، مسلم سماج کو ایک اور سرسید درکار

مولوی ملّا نہیں، مسلم سماج کو ایک اور سرسید درکار

ظفر آغا خدا کسی قوم کو ایسا برا وقت نہ دکھائے جیسا کہ مسلم اقلیت اس وقت اس ملک میں دیکھ رہی ہے۔ آج مسلم قوم کی کوئی قیادت نہیں۔ اس کی کوئی آواز یا کوئی زبان نہیں۔ اس کا ووٹ بے معنی اور بے اثر ہو چکا ہے۔ اس کا حال و مستقبل سب اندھیرے میں ہے۔ وہ جائے […]

· 0 comments · کالم
بلوچستان کے بعد سندھ کو کون سے اہل  دانش دیوار  سے لگا رہے ہیں؟

بلوچستان کے بعد سندھ کو کون سے اہل  دانش دیوار  سے لگا رہے ہیں؟

قربان بلوچ سابق آمر جنرل پرویزمشرف کی عاقبت نااندیشی کی وجہ سے بلوچستان میں حالات سخت خراب ہوئے تا حال سنبھلنے کا نام نہیں لے رہے۔ اب وہی  صورتحال  سندھ میں  پیدا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ یہ بات سمجھ  سے بالاتر  ہے وہ کون سے اہل دانش ہیں جو موجودہ حکومت کو ایسے کام  کروا رہے ہیں۔   اس  جدید الیکٹرانک دور میں  اپنے کرتوتوں کو کس طرح چھپایا […]

· 1 comment · کالم
لیاری کے ڈان : شیرک دادل سے عزیر بلوچ تک۔قسط سوم

لیاری کے ڈان : شیرک دادل سے عزیر بلوچ تک۔قسط سوم

حسن مجتبیٰ ایک دفعہ بیگم نصرت بھٹو نے کراچی کے حالات پر لیاری میں ایک جلسے میں تقریر کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر جرائم اور دہشت گردی کا تعلق بھوک بیروزگاری اور غربت سے ہے تو پھر لیاری کے نوجوان کیوں نہیں کلاشنکوف لیکر اپنے پڑوسی کے گھر میں کود جاتے۔”یہ 1980 کی دہائی تھی ابھی لیاری میں بلوچی […]

· 0 comments · کالم
استنبول سے تل ابیب تک

استنبول سے تل ابیب تک

طارق احمد مرزا سولہ اگست 2020 میرے لیے حیرت اور مایوسی سے لبریز ترین دن ثابت ہوا۔ دراصل  کل اخبارات میں ترکی کے صدر محترم طیب اردوآن صاحب کی مبینہ دھمکی پڑھنے کو ملی تھی جس میں انہوں نے متحدہ عرب امارات کو اسرائیل کے ساتھ دوطرفہ رسمی تعلقات کے اعلان کو “منافقت” قرار دیتے ہوئے دھمکی دی تھی کہ […]

· 0 comments · کالم
اور جب جہاز پٹ گیا اور مٹھائی بٹ گئی ہائے حسین

اور جب جہاز پٹ گیا اور مٹھائی بٹ گئی ہائے حسین

حسن مجتبیٰ یہ اس شام پہلا اور آخری محرم تھا جس میں امام بارگاہوں میں کچھ گھنٹے جشن کا سماں تھا اور مٹھائیاں بٹی تھیں۔ لیکن17 اگست 1988 کی اس دوپہر میں اپنے دوست ذولفقار شاہ با المعروف پپوشاہ کیساتھ شیعہ عالم عبدالغفور جانوری کیساتھ حیدرآباد سے بھٹ شاہ نکلا تھا اور ہمارے ساتھ ہمارا دوست اور زمیندار ملنگ المولا […]

· 1 comment · کالم
عرب امارات اور اسرائیل امن معاہدہ، بائیں بازو کے کارکنوں کی خدمت میں

عرب امارات اور اسرائیل امن معاہدہ، بائیں بازو کے کارکنوں کی خدمت میں

لیاقت علی پاکستان میں بائیں بازو کے تجربہ کار کارکن اپنے سیاسی اور سماجی تجزیوں کی بنیاد مارکسی اصولوں پر استوار کرتے ہیں۔ انھوں نے متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین ہونے والے معاہدے کے پس منظر میں سوشل میڈیا میں لکھا ہے کہ اسرائیل کو تسلیم کرنا فلسطینیوں کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے کے متراد ف ہے۔مزید یہ […]

· 0 comments · کالم
مولانا رومی کا پیغام محبت، جہاں تک پہنچے

مولانا رومی کا پیغام محبت، جہاں تک پہنچے

 بیرسٹرحمیدباشانی ہم علم وشعورکے دورکے لوگ ہیں۔ ہمارے دورکا انسان سائنس اورسماجی علوم کی معراج پرتو نہیں،  لیکن اس میدان میں حیرت انگیزترقی ضرورکرچکا ہے۔  وہ اب ستاروں پرکمند ڈال رہا ہے۔  نئے سیارے ڈھونڈ رہا ہے۔  اورنئی دنیا کی تلاش میں خلانوردی کررہا ہے۔مگربد قسمتی سے ایک طرف جہاں ہمارے ارد گرد تیزی سےعلم وشعوربڑھ رہا ہے، وہاں دوسری طرف جہالت تعصب، تنگ […]

· 0 comments · کالم
لویہ جرگہ ۔ افغانستان کے بحرانوں کے حل کی کنجی

لویہ جرگہ ۔ افغانستان کے بحرانوں کے حل کی کنجی

محمدحسین ہنرمل افغانستان کو جرگوں کا ملک کہاجاتاہے کیونکہ جرگہ افغانوں کے ہاں اس جمہوری عمل کانام ہے جس کے ذریعے افغان کئی صدیوں سے اپنے سیاسی ، سماجی اور ریاستی معاملات حل کرتے آئے ہیں۔ بنیادی طور پرجرگے دو طرح کے ہوتے ہیں،یعنی لوکل اور زیریں سطح کے معاملات کونمٹانے کیلئے چھوٹاجرگہ جبکہ قومی سطح کے مسائل کے حل […]

· 0 comments · کالم
پاکستان اور بھارت کا دوقومی نظریہ

پاکستان اور بھارت کا دوقومی نظریہ

لیاقت علی وزیر اعظم پاکستان کو ریاست مدینہ بنانا چاہتے ہیں لیکن بھارتی وزیراعظم مودی پر معترض ہیں کہ وہ بھارت کو ہندو ریاست کیوں بنانا چاہتے ہیں۔جسٹس منیر(منیر انکوائری رپورٹ میں لکھتے ہیں ) نے مولانا مودودی سے پوچھا تھا کہ آپ پاکستان میں شریعت کے نفاذ کے مدعی ہیں اگر بھارت اپنے ہاں مسلمانوں کو ملیچھ قرار دے […]

· 1 comment · کالم
کیا ترکی مسلم امہ کا نیا لیڈر بن پائے گا؟

کیا ترکی مسلم امہ کا نیا لیڈر بن پائے گا؟

بیرسٹرحمیدباشانی ہماراعہد دنیا میں بڑی تبدیلیوں کاعہد ہے۔ ایک بڑی تبدیلی عالمی سیاست میں رونما ہورہی ہے۔دنیا میں نئی صف بندیاں ہورہی ہیں۔یونی پولردنیا ملٹی پولردنیا کی شکل اختیارکررہی ہے۔سیاسی اور معاشی افق پرنئی بڑی علاقائی اورعالمی طاقتیں ابھررہی ہیں۔ کچھ پرانی بڑی طاقتوں کا سورج غروب ہورہا ہے۔  یہ ایک تیزرفتاراورہنگامہ خیزدورہے۔ ایسے دورمیں حکمران اشرافیہ اوران کے اردگرد […]

· 0 comments · کالم
کیا جاگیر داری ہی ملکی ترقی میں رکاوٹ ہے؟

کیا جاگیر داری ہی ملکی ترقی میں رکاوٹ ہے؟

لیاقت علی پاکستان کے اکثر باشعور احباب یہ کہتے دکھائی دیتے ہیں کہ قیام پاکستان کے فوری بعد اگر جاگیرداری کو ختم کردیا جاتا تو پاکستان کو ان معاشی اور سیاسی مسائل کا سامنا نہ کرنا پڑتا جو بعد کی دہائیوں میں اس کا مقدر بنے اور اس کے سماج اور ریاست کی ٹوٹ پھوٹ بھی نہ ہوتی تو سوائے […]

· 0 comments · کالم
امن کی آشائیں یا نراشائیں

امن کی آشائیں یا نراشائیں

حسن مجتبیٰ اگر میرے جیسے شخص سے بھارت اور پاکستان کے درمیان امن کا پوچھیں تو میں تو اس حد تک جانے کا قائل ہوں کہ اگر برلن دیوار گرنے کے بعد دو جرمنیوں مشرقی اور مغربی کی ری یونفیکیشن یا ازسر نو ادغام ہو سکتا ہے تو پاکستان اور انڈیا کے بیچ بھی یہ دھوکے کی دیوار کیوں نہیں […]

· 0 comments · کالم
کیا سافٹ وئیر اپ ڈیٹ ہوگیا ہے؟

کیا سافٹ وئیر اپ ڈیٹ ہوگیا ہے؟

مطیع اللہ جان پاکستان میں اغوا، لاپتہ یا ماورا عدالت مارے جانے والے والوں سے متعلق نوجوان نسل کے ایک مخصوص طبقے کی بے حسی شرمناک حدوں کو چھو رہی ہے۔ مقتدر اداروں اور ان سے ملی بھگت سے حکومت بنانے والے سیاسی حلقوں کے پڑھے لکھے چشم و چراغ دور دراز علاقوں میں اغوا یا لاپتہ ہونے والے افراد […]

· 0 comments · کالم
کیا چین سپر پاور بن سکتا ہے؟

کیا چین سپر پاور بن سکتا ہے؟

بیرسٹرحمید باشانی دانشورکہتے ہیں اکیسویں صدی ایشیا کی صدی ہے۔ اس صدی میں ایشیا کےکئی ممالک غربت اورپسماندگی سےنکل کرخوشحال ممالک کی صفوں میں شامل ہوجائیں گے۔  اورکچھ  ملک ترقی پذیرسے ترقی یافتہ  بن جائیں گے۔ان معنوں میں یہ صدی ایشیا کی صدی ہے۔  مگرسب سے بڑھ کریہ چین کی صدی ہے۔ اس وقت پوری دنیا کی نظریں چین پرلگی […]

· 0 comments · کالم
ملک پر موت اور بھکمری کا سایہ، حکومت لاپرواہ

ملک پر موت اور بھکمری کا سایہ، حکومت لاپرواہ

ظفر آغا جناب آپ امیتابھ بچن کے حالات سے بخوبی واقف ہیں۔ حضرت نے تالی بجائی، تھالی ڈھنڈھنائی، نریندر مودی کے کہنے پر دیا جلایا، سارے خاندان کے ساتھ بالکنی میں کھڑے ہو کر ‘گو کورونا، گو کورونا‘ کے نعرے لگائے، اور ہوا کیا! حضرت مع اہل و عیال کورونا کا شکار ہو کر اسپتال پہنچ گئے۔ ارے فلمی ہستیوں […]

· 0 comments · کالم
آیا صوفیہ کی میوزیم سے مسجد میں تبدیلی:کیا آمریت کا تسلسل ہے؟

آیا صوفیہ کی میوزیم سے مسجد میں تبدیلی:کیا آمریت کا تسلسل ہے؟

عائشہ صدیقہ میرے ایک دوست نے شکوہ کیا کہ میں طیب اردعان کے حالیہ اقدام یعنی آیا صوفیہ کو میوزیم سے مسجد میں تبدیل کرنے پر بھرپور طریقے سے آنسو نہیں بہائے ۔ حالانکہ میں تو کئی سال پہلے ہی اس بات کا رونا رو چکی ہوں کہ ترکی میں کئی دہائیوں کی فوجی ڈکٹیٹر شپ کے ردعمل میں اسلام کی […]

· 0 comments · کالم
چین جارحانہ رویہ کیوں اختیار کررہا ہے؟

چین جارحانہ رویہ کیوں اختیار کررہا ہے؟

بیرسٹرحمیدباشانی ہم بدلیں یا نہ بدلیں، مگرہمارےاردگردکی دنیابڑی تیزی سےبدل رہی ہے۔ “ثبات ایک تغیرکو ہے زمانے میں” ۔ یہ ایک مسئلہ امرہے، اس میں کوئی اطلاع نہیں ہے۔ جیسا کہ ہم جانتے ہیں، انسانی سماج کوئی ساکت وجامد شے نہیں ہے۔سماج ہمہ وقت تبدیلی اورتغیرکےعمل سے گزرتا رہتا ہے؛ چنانچہ یہ دنیالمحہ بہ لمحہ بدلتی رہتی ہے۔  لیکن اس تحریرکا […]

· 0 comments · کالم